Ship human heart 39

انسانی دل جہازمیں

انسانی دل جہازمیں رہ گیا، پرواز کی آدھے راستے سے واپسی

امریکی ایئر لائن کی سنگین غلطی سے عطیہ کردہ انسانی دل ضائع ہوتے ہوتے رہ گیا، ایئر لائن منزلِ مقصود پر دل اتارے بغیر ہی آگے روانہ ہوگئی۔ تفصیلات کے مطابق امریکہ کی ساؤتھ ویسٹ ایئرلائنز کی مذکورہ پرواز سیاٹل سے ڈیلس جارہی تھی۔ مسافر طیارے کو پرواز کے کئی گھنٹے بعد واپس بلایا گیا کیونکہ اس میں موجود انسانی دل کو عملہ اتارنا بھول گیا گیا تھا۔ ایئر لائن انتظامیہ کا کہنا ہے کہ عطیہ کردہ دل کو مسافر طیارے کے ذریعے کیلیفورنیا سے سیاٹل لایا گیا تھا اور یہاں سے اسے مقامی ہسپتال پہنچایا جانا تھا، لیکن

اس کو جہاز سے اتارا نہیں گیا اور جہاز اپنی دوسری منزل کی جانب روانہ ہوگیا، آدھے راستے تک پہنچ چکا تھا کہ غلطی کا احساس ہوا۔ طیارے میں سوار مسافروں کو اس وقت شدید شدید حیرت ہوئی جب جہاز کے کپتان نے انہیں مطلع کیا کہ’ایک انسانی دل‘ جہاز میں رہ جانے کے سبب فلائٹ کو واپس موڑا جارہا ہے۔ بعض لوگوں نے اپنے سمارٹ فونز کی مدد سے یہ جاننے کی کوشش کی کہ انسانی دل کتنی دیر تک ٹراسپلانٹ آپریشن کے لیے قابل استعمال رہتا ہے ۔ ماہرین کے مطابق ایسا چار سے چھ گھنٹے کے اندر ممکن ہوتا ہے۔ دل کو مقررہ مدت کے اندر اندر ہی ڈونر ہیلتھ سینٹر پہنچا دیا گیا تھا۔انسانی دل کسی مخصوص مریض کے لیے نہیں تھا۔ یہ واقعہ اتوار کو پیش آیا تھا ، تاہم میڈیا میں اس کی خبر جمعرات کو تصدیق کے بعد ہی نشر ہوسکی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں